برطانیہ میں خواجہ سرا ءنے خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا

برطانوی جزیرے گرنزی پر ایک خاتون کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے ’خواجہ سرائ‘ کو عدالت نے مجرم قرار دے دیا۔ میل آن لائن کے مطابق اس خواجہ سراءکا جنس تبدیل کرانے سے قبل نام فریڈی کرسچین ٹرینچرڈ تھا۔ اب جنس تبدیل کراکے خاتون بننے کے بعد اس نے اپنا نام الیزا کرسچین رکھ لیا ہے۔19سالہ الیزا کرسچین نے جنس تبدیل کرانے سے قبل 2021ءمیں ایک خاتون کو اپنے اپارٹمنٹ میں بلا کر اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ الیزا نے عدالت میں اپنے خواجہ سراءہونے کا موقف اپنایا جس پر پراسیکیوٹرز کی طرف سے بتایا گیا ہے جب اس نے جرم کیا تھا اس وقت یہ مرد تھا۔ اس کے بعد اس نے جنس تبدیل کرائی اور عورت بن گیا۔عدالت کی طرف سے الیزا کو مجرم قرار دے دیا گیا ہے۔ اس کی سزا کا تعین آئندہ پیشی پر کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں